طلباء پر تشدد جمہوریت کی موت ہے، کبیرخان

طلباء کو احتجاج کا حق حاصل ہے، آپ ان کو اختلاف کرنے سے کیسے روک سکتے ہیں، انٹرویو

بدھ جنوری 13:04

طلباء پر تشدد جمہوریت کی موت ہے، کبیرخان
ممبئی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 15 جنوری2020ء) بھارتی فلم ساز کبیر خان نے بھارت کی معروف یونیورسٹی جامعہ ملیہ اسلامیہ کے طلباء پر دہلی پولیس اہلکاروں کے تشدد پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر حکومت کو لگتا ہے طلباء غلط ہیں تو ان سے مذاکرات کئے جائیں لیکن یہ بالکل غلط ہے کہ پولیس ان پر یونیورسٹی کے اندر تشدد کرے۔

(جاری ہے)

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کبیر خان نے کہاکہ انہوں نے ٹی وی پر پولیس تشدد کی وڈیو دیکھی جو کہ ان کے لئے بہت پریشان کن تھی۔

انہوں نے کہا کہ طلباء کو احتجاج کا حق حاصل ہے، آپ ان کو اختلاف کرنے سے کیسے روک سکتے ہیں۔یادرہے کہ بھارتی فلم ساز کبیر خان نے بھی بھارت کی یونیورسٹی جامعہ ملیہ اسلامیہ سے ہی تعلیم حاصل کی ہے۔ وہ کئی بالی ووڈ سپر ہٹ فلمیں بنا چکے ہیں۔ جن میں سپر اسٹار سلمان خان کی فلمیں بھی شامل ہیں۔

متعلقہ ستارے‎ :

Kabir Khan

کبیر خان

Kabir Khan

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

سلمان خان نے شاہ رخ خان کو پیچھے چھوڑ دیا

سلمان خان نے شاہ رخ خان کو پیچھے چھوڑ دیا

بھارتی اداکار سلمان خان نے شاہ رخ خان کو پیچھے چھوڑ دیا۔ گزشتہ دہائی بھارتی فلم سٹار سلمان خان کی فلمیں بالی ووڈ کنگ شاہ رخ خان سے زیادہ دیکھی گئیں۔گزشتہ دنوں جہاں 2019 کا اختتام ہوا تو وہیں ایک دہائی بھی مکمل ہوگئی اور اِسی دوران مختلف کیٹیگریز کی بہت ... مزید

وقت اشاعت : 15/01/2020 - 13:04:29

Your Thoughts and Comments