پولیس نے ریسٹورانٹ پر چھاپہ مار کر 30 نوجوان لڑکے لڑکیوں کو گرفتار کر لیا

ریسٹورانٹ پر منشیات اور فحاشی کا کام جاری تھا،منشیات اور 50 سے زائد حقہ شیشے برآمد

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان بدھ جنوری 16:20

پولیس نے ریسٹورانٹ پر چھاپہ مار کر 30 نوجوان لڑکے لڑکیوں کو گرفتار کر ..
کراچی (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔15 جنوری 2019ء) کراچی میں پولیس نے ریسٹورنٹ پر چھاپے کے دوران 30 سے زائد نوجوان لڑکیاں لڑکے گرفتار کر لیا ہے۔باغی ٹی وی رپورٹ کے مطابق کراچی کے علاقےمیں سائٹ سپرہائی وے پولیس نے ایک ریسٹورانٹ پر چھاپہ مارا،جہاں منشیات اور فحاشی کا اڈا کھلا ہوا تھا،پولیس نے کاروائی کرتے ہوئے 30 سے زائد نوجوان لڑکے اور لڑکیوں کو گرفتار کیا۔

تھانہ سائٹ سپر ہائی وے کے ایس ایچ او محمد مٹھل نے پولیس کی بھاری نفری کے ہمراہ جمالی پل کے پاس ریسٹورنٹ کے نام سے قائم منشیات اور فحاشی کے اڈے پر چھاپہ مارا، کاروائی کرتےہوئے منشیات پینے اور فحش حرکتیں کرنے والے کئی نوجوانوں کو گرفتار کیا،گرفتار افراد میں لڑکیاں بھی شامل ہیں۔پولیس کے مطابق کاروائی کے دوران منشیات کے اڈے سے بھاری مقدار میں مختلف اقسام کی منشیات اور 50سے زائد حقہ شیشے بھی برآمد کیے گئے۔

(جاری ہے)

اڈے کے مالکان موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے ہیں۔جب کہ چند ملازمین کو بھی پولیس نے گرفتار کیا ہے۔فرار ہونے والےمالکان کی تلاش جاری ہے۔واضح رہے کہ کراچی میں کئی چائے خانہ کھلے ہوئے ہیں۔جو نوجوان نسل کی بیٹھکیں بن چکی ہیں۔ ڈیفنس سے دعامنگی کے اغوااوربازیابی کے بعدادارے حرکت میں آگئے اور کلفٹن کنٹونمنٹ بورڈ،ڈی ایچ اے،پولیس نے مشترکہ طور پر ڈیفنس کے مختلف علاقوں میں قائم چائے خانوں کیخلاف کارروائیاں شروع کی گئی تھیں۔

چائے خانوں کے باہر اضافی لینڈ پر ملبے کا ڈھیر ڈال دیا گیا تھا اور رات 12 بجے کے بعد بند کرنے کے احکامات جاری کردیئے گیے تھے۔ خیابان بخاری،خیابان مسلم پربڑی تعدادمیں چائے خانے قائم ہیں۔کنٹونمنٹ بورڈ حکام کے مطابق جمعہ،ہفتہ اوراتوار کو رش ہونے کے باعث سختی کی گئی، خلاف ورزی پرچائے خانوں کے خلاف سخت کارروائی ہوگی۔

متعلقہ عنوان :